ڈونلڈ ٹرمپ کی جیت کے لیے عربی میدان میں آ گئے ۔۔۔ کتنے ملین ڈالر نچھاور کر دیے ؟ جان کر آپ بھی یقین نہیں کریں گے

لاہور (ویب ڈیسک) امریکی الیکشن مہم عروج پر ہے۔آج جلد یا بدیر یہ فیصلہ ہو ہی جائے گا کہ امریکی صدارت کی کرسی پرجو بائیڈن یا ٹرمپ میں سے کون بیٹھتا ہے۔اس میں کوئی شک نہیں کہ دونوں امیدواروں کے درمیان کانٹے کا مقابلہ ہے۔اس وقت تک کچھ ریاستوں کے الیکٹورل بورڈ کا فیصلہ آنا شروع ہو چکا ہوا ہے۔

جس کے مطابق کہیں ڈونلڈ ٹرمپ آگے ہے تو کہیں جوبائیڈن نے معرکہ مار رکھا ہے۔تاہم حتمی فیصلہ تو الیکٹورل بورڈ کا فیصلہ آنے کے بعد ہی ہو گا۔ٹرمپ اور بائیڈن نے اپنی تقاریر اور مباحثے میں ایک دوسرے پر اسرائیل،چین اور روس سے پیسے لینے اور ان کی انٹیلی جنس ایجنسیوں کی مدد سے جیتنے کی کوشش کرنے کے علاوہ مالی مدد بھی حاصل کی، جیسے الزامات بار بار لگائے۔اس کے علاوہ بھی انہوں نے کئی قسم کے الزامات ایک دوسرے پر لگائے۔سچ کیا ہے اور جھوٹ کیا ہے اس کا تو اگرچہ فیصلہ نہیں کیا جاسکتا مگر یہ تو حقیقت ہے کہ کسی بھی ملک کے انتخابات میں کنسرن رکھنے والے ممالک دخل اندازی ضرور کرتے ہیں اور ہر امیدوار کے حامی اور ہمدرد ممالک پیسوں کی امداد بھی دیتے ہیں۔اب ایک اسرائیلی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کو الیکشن جتوانے کے لیے تحفہ کے طور پر عربوں نے ملین ڈالر دیے ہیں۔عربوں جن میں دبئی اور سعودی عرب کا زیادہ نام لیا جا رہا ہے کہ متعلق دعویٰ کیا گیا ہے کہ انہوں نے ٹرمپ کو الیکشن جیتنے کی خاطر ملین ڈالر امداد دی ہے اور ان کی نیک خواہشات ہیں کہ ٹرمپ ہی جیتے کیونکہ اس کے مڈل ایسٹ میں جس قسم کے مقاصد ہیں وہ انہیں کے ساتھ آگے چلنا چاہتے ہیں۔اخبار میں یہ بھی دعویٰ کیا گیا ہے کہ اگرچہ ڈونلڈ ٹرمپ نہیں جیتے گا مگر عربوں کی انویسٹمنٹ اس کی جیت پر ہی لگی ہوئی ہے۔ مگر عربوں کی انویسٹمنٹ اس کی جیت پر ہی لگی ہوئی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.