سب ڈرامہ نکلا ۔۔۔! آئی جی سندھ کس کی گاڑی میں بیٹھ کر گئے‘ ا-غواہ اور زبردستی مقدمات کی خبروں کا ڈراپ سین ۔۔۔ انکشاف نے تہلکہ مچا دیا

ننکانہ صاحب(ویب ڈیسک) وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا کہ آئی جی سندھ کو کسی نے ا-غوا نہیں کیا، وہ خود اپنی گاڑی میں گئے ، اغوا کامطلب ہوتا ہے کہ بندے کو اس کی مرضی کے خلاف لیجانا۔تفصیلات کے مطابق ہفتہ کو وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کڈنی سینٹر کے نئے یونٹ کا افتتاح کے موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا

کہ فائیو اسٹار ہوٹل کی ماسٹر چابی انتظامیہ کے پاس ہوتی ہے، پولیس کو دروازہ توڑنے کی کیا ضرورت ہے ،مریم بی بی جھوٹ بولتی ہے۔نواز شریف کے حوالے سے وفاقی وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے برطانیہ میں علاج تو کیابخار بھی چیک نہیں کروایا، نواز شریف بالکل ٹھیک ہیں انھیں واپس آ جانا چاہیے۔کراچی واقعے سے متعلق اعجاز شاہ نے کہا آئی جی سندھ کو کسی نے ا-غوا نہیں کیا، ا-غوا کامطلب ہوتا ہے کہ بندے کو اس کی مرضی کے خلاف لیجانا جبکہ آئی جی سندھ خود اپنی گاڑی میں گئے تھے۔ان کا کہنا تھا قائد اعظم کے مزار پر بھٹو اور بینظیر نے بھی اس طرح کی حرکت نہیں کی ، لیڈر شپ ملک کو لوٹ کر باہر چلی گئی ہے، اداروں کو برا بھلا کہہ رہی ہے، جب یہ باہر بیٹھ کر باتیں کرتے ہیں تو ش ہدا کے ورثا کو دکھ پہنچتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.