داڑھی رکھنے پر معطل مسلمان بھارتی پولیس کانسٹیبل نے گھٹنے ٹیک دیے۔۔۔ تفصیلات نے بھارت کا مکروہ چہرہ دنیاکے سامنے بے نقاب کردیا

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارتی پولیس کے مسلمان کانسٹیبل نے نوکری بچانے کیلئے بالآخر گھٹنے ٹیک دیے جس کے بعد اسے نوکری پر بحال کردیا گیا۔اترپردیش کے شہر باغپت میں ایس ایس پی نے مسلمان پولیس کانسٹیبل انصار علی کو داڑھی رکھنے کے جرم میں ملازمت سے معطل کردیاتھا۔
مسلم کانسٹیبل کو تین بار تنبیہ کی گئی تھی کہ وہ اپنی داڑھی کو منڈوا دیں یا اس کیلئے طریقہ کار کے مطابق حکام سے باقاعدہ طور پراجازت لیں۔

انہوں نے 29 نومبر 2019 میں انسپکٹر جنرل (آئی جی) میرٹھ کو ایک خط لکھا تھا اور آئی جی سے داڑھی رکھنے کی اجازت مانگی تھی۔ سب انسپکٹر کی جانب سے لکھے گئے اس خط پر ایک سال گزرنے کے بعد بھی کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا تھا جس پر وہ داڑھی کے ساتھ ہی نوکری کرتا رہا۔اس کے بعد پولیس کے اعلیٰ حکام نے انصار علی کے خلاف محکمانہ کارروائی کا حکم دیا تھا اور اسے معطل کر دیا گیا تھا۔ تاہم اب نوکری بچانے کی خاطر انصار نے اپنی داڑھی منڈوالی ہے جس کے بعد اسے ڈیوٹی پر بحال کردیا گیا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.