بلیک آؤٹ :حیران کن رپورٹ

لاہور(ویب ڈیسک) نامور کالم نگار عبداللہ بابر اعوان اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔دنیا کے دوسرے بڑے بڑے بلیک آئوٹس میں سے دوکا ذکر کرنا بہت ضروری ہے‘پہلا بلیک آئوٹ نارتھ ایسٹ امریکہ اور ناردرن کینیڈا میں 9نومبر 1965ء کے روز ہواجس سے امریکہ اور کینیڈا کی سینکڑوں آبادیاں اور شہر متاثر ہوئے۔

اس بلیک آئوٹ کے نتیجے میں پھیلنے والے خوف کا اندازہ لگانے کیلئے صرف اتنا جان لینا ہی کافی ہوگا کہ بلیک آئوٹ کی وجہ سے ٹرینوں کے آٹھ لاکھ مسافر نیویارک کی سب وے میں پھنس گئے۔امریکہ کی تاریخ کا سب سے بدنام زمانہ بلیک آئوٹ 13جولائی1977ء کے دن پیش آیاجب نیو یارک میں آسمانی بجلی گرنے کی وجہ سے ایسا الیکٹرک بریک ڈائون ہوا جس کے نتیجے میں پورے24 گھنٹے تک نیو یارک مکمل اندھیرے میں ڈوبا رہا۔نیو یارک بلیک آئوٹ شدید ہیٹ ویو اور مالی بحران میں آیا تھا جس کے دوران نیو یارک شہر جنگلی جانوروں کی طرح وحشی ہو گیا۔اس کا اندازہ لگانے کے لیے چند رپورٹڈ تفصیلات یوں ہیں کہ بلیک آئوٹ کے دوران ایک ہزار جگہوں پر مختلف پراپرٹیز کو نذر آتش کر دیا گیا ۔اس آگ کی وجہ سے صبح تک 25جگہ شعلے بھڑکتے ہوئے دور دور سے نظر آرہے تھے۔1616شاپس ‘شاپنگ مالز اور سٹورز کو لوٹ لیا گیا۔جو مال نہیں لوٹاجاسکا ‘اسے یا تو توڑ دیا گیا یا اسے آگ کے شعلوں میں جھونک دیا گیا۔موٹر ڈیلر شپ کے شوروم سے 50نئی گاڑیاں چور لے گئے۔بروکلین میں کیمرے کی آنکھ نے دکھایا کہ نیو یارکرز نے دکانوں کی گرِلز اور شٹر پر رسیاں باند ھ کر بڑی بڑی گاڑیوں سے انہیں کھینچا اور پھر ان دکانوں اور مالز کو اجتماعی طور پر لوٹ لیا گیا۔نیو یارک شہر میں 13اور 14جولائی 1977ء کے روز جرائم پیشہ عناصر کا راج تھا ۔اس جرم راج کے دوران نیو یارک پولیس ڈپارٹمنٹ(NYPD)کے 550پولیس آفیسرز کو مجرموں نے زدوکوب کرکے ادھ موا کر دیا۔ 1037پراپرٹیز پر لگائی جانے والی آگ اور لوٹ مار کے نقصان کی جو سٹڈی سامنے آئی اس کے مطابق نیو یارک بلیک آئوٹ کے دوران ہونے والے نقصان کی ویلیو300ملین امریکی ڈالر سے بھی زیادہ تھی جو 2021ء میں 1.31ارب امریکی ڈالر بنتی ہے۔دنیا میں جہاں جہاں بڑے بڑے بلیک آئوٹ ہوئے جن کی تفصیل یہاں لکھی گئی ہے‘ان میں سوسائٹی کے کالے چہرے اور بد نما داغ کھل کر سامنے آگئے۔پاکستان میں بجلی کا بلیک آئوٹ ہوا‘بے شک ہوالیکن بہت سے’ مہذب‘ ممالک کے برعکس کسی بھی گراسری سٹورز اور شاپنگ مالز کو نہیں لوٹا گیا۔ سوشل میڈیا پر اُکسائے جانے کے باوجود پاکستان کے عوام پُر سکون رہے۔ لوگوں نے بجلی کے بلیک آئوٹ پر آدھے گھنٹے میں 5کروڑ ”میمز‘‘ شیئر کر کے نیا ورلڈ ریکارڈ بنا لیالیکن روشن سماج نے کالے اندھیرے میں لوٹ مار کا ایک واقعہ بھی نہ کر کے دوسرا ورلڈ ریکارڈ بھی بنایا ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

site-verification: a5f3ae327aefe7db9b1fdb6f7c6a8b26