بریکنگ نیوز: بھائی کا قصہ ختم ۔۔۔ لندن کی عدالت سے الطاف حسین کے حوالے سے تہلکہ خیز حکم جاری

لاہور(ویب ڈیسک)برطانوی عدالت نے بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کے حوالے سے اہم حکم جاری کیا ہے۔ عدالت کے حکم کے مطابق بانی ایم کیو ایم کے زیر انتظام چھ ٹرسٹ کے اثاثے منجمد کرنے کا حکم جاری کردیاہے اورکہاہے کہ عدالتی احکامات کے تحت بانی متحدہ اور ان کے ساتھی

مقدمے کا نتیجہ نکلنے تک ان پراپرٹیز میں رہ سکتے ہیں تاہم انہیں بیچا نہیں جاسکتا۔ میڈیارپورٹس کے مطابق برطانوی ڈپٹی ہائیکورٹ جج پیٹر ناکس کے احکامات پر منجمد کی گئی پراپرٹیز میں ایبے ویو ہائوس، ہائی ویو گارڈنز فرسٹ ہاس، وائٹ چرچ لین فرسٹ ہائوس، بروک فیلڈ ایونیو ہائوس، ہائی ویوگارڈنز سیکنڈ ہائوس، وائٹ چرچ لین سیکنڈ ہاس اور ایم کیو ایم کا فرسٹ فلور الزبتھ ہائوس دفتر شامل ہے۔ عدالتی احکامات کے تحت بانی متحدہ اور ان کے ساتھی مقدمے کا نتیجہ نکلنے تک ان پراپرٹیز میں رہ سکتے ہیں تاہم انہیں بیچا نہیں جاسکتا۔ خیال رہے کہ اثاثوں کے حق میں مقدمہ ایم کیو ایم پاکستان نے دائرکیا جس کا موقف ہے کہ یہ اثاثے اس کی ملکیت ہیں اور ان اثاثوں کی ملکیت 15 ملین پانڈ یعنی تقریبا 3 ارب روپے سے زیادہ ہے جب کہ ٹرائل میں چند ماہ لگنے کا امکان ہے،یاد رہے کہ برطانوی پولیس نےایم کیو ایم کے رہنما الطاف حسین کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ ختم کر دیا تھااور ضبط شدہ جائیداد اور رقم کی واپسی بھی شروع کی گئی تھی،عالمی میڈیا کو ملنے والی دستاویز کے مطابق برطانوی پولیس نے متحدہ قومی موومنٹ لندن کو ایک خط کے ذریعے آگاہ کیا کہ منی لانڈرنگ کیس میں ایم کیو ایم کے بانی الطاف حسین سمیت دیگر افراد کے خلاف تحقیقات ختم کر دی گئی ہیں اور ضبط شدہ رقم کی واپسی کا عمل شروع کیا جائے گا۔ایم کیو ایم لندن کے وکیل کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ برطانیہ کی کراؤن پراسیکیوشن سروس کے مشورے پر یہ مقدمہ بند کیا جا رہا ہے اور آئندہ اس مقدمے میں کوئی کارروائی نہیں ہو گی۔خط کے متن کے مطابق ضبط شدہ رقم اور پراپرٹیز کی کی واپسی کا عمل شروع کیا جا رہا ہے۔برطانوی پولیس سکاٹ لینڈ یارڈ نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ منی لانڈرنگ کیس میں ایم کیو ایم کے بانی الطاف حسین سمیت چھ افراد کے خلاف تحقیقات ختم کر دی گئی ہیں۔یاد رہے کہ سنہ 2012 میں سکاٹ لینڈ یارڈ نے ایم کیو ایم کے لندن سیکٹریٹریٹ اور قائد الطاف حسین کے مکان پر چھاپا مارا تھا۔ اُن کے مکان سے پانچ لاکھ پاؤنڈ کی رقم برآمد ہوئی تھی۔ جس کے بعد سنہ الطاف حسین سمیت دیگر افراد کے خلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات کا آغاز کیا گیا تھا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *